Urdu Manzil


Forum
Directory
Overseas Pakistani
 


نسرین سید

تمہارے ہجر میں صدمے اٹھائے ہیں کیا کیا
یہ درد، رنج و الم دل کو بھائے ہیں کیا کیا


زمانہ ۔۔۔۔ بیچ کی دیوار بن سکا نہ کبھی
جنون عشق نے رستے سجھائے ہیں کیا کیا
وہ مجھ کو دیکھ رہے تھے بچشم   دُزدیدہ
جو میں نے دیکھ لیا ، سٹپٹائے ہیں کیا کیا
وہ ساتھ دے گا مرا ۔۔۔ آخری کنارے تک
فریب میں نے بھی چاہت میں کھائے ہیں کیا کیا
بہت اداس تھے کنگن میری کلائی کے
کسی کو دیکھ کر یہ کھنکھنائے ہیں کیا کیا
کہیں پہ رکھوں، کہیں پاؤں پڑ رہے ہیں مرے
کسی کی آنکھ نے ساغر پلائے ہیں کیا کیا
کسی کا آکے ۔۔۔۔۔۔۔۔ اچانک گلے لگا لینا
پلک پلک پہ گہر جھلملھائے ہیں کیا کیا
سنا ہے آئیں گے ساون میں اب کے وہ ملنے
دوپٹے ہم نے بھی دھانی رنگائے ہیں کیا کیا
سنی جو بات مری ، بے رخی سے ٹال دیا
یہ بات سن کے کبھی، وہ لجائے ہیں کیا کیا
کسی کی ایک جھلک دیکھنے کی خواہش میں
متاع وقت سے ۔۔۔۔ لمحے چرائے ہیں کیا کیا
ملا جو حکم ۔۔۔۔۔۔۔۔۔ کہ تسخیر کائینات کرو
طلسم ۔ خاک سے نقشے اٹھائے ہیں کیاکیا

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

Blue bar

CLICK HERE TO GO BACK TO HOME PAGE